فواد چوہدری نے چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کو خط لکھ دیا,

الیکشنز کیلئے عدالتی افسران کو نامزد کیا جائے: پی ٹی آئی کا چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کو خط

فواد چوہدری نے چیف جسٹس

فواد چوہدری نے چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ کو خط لکھ دیا,

پاکستان تحریک انصاف نے پنجاب میں 30 اپریل کو ہونے والے عام انتخابات کے لیے جوڈیشل افسران کے ذریعے کوششیں شروع کر دی ہیں۔

مرکزی سینئر نائب صدر فواد چوہدری نے چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ کو خط لکھ کر الیکشن کے لیے جوڈیشل افسران کی نامزدگی کی درخواست کی ہے۔

فواد چوہدری نے کہا کہ شفافیت کے پیش نظر الیکشن ہمیشہ ڈی آر اوز اور آر اوز جوڈیشل افسران پر مشتمل ہوتے ہیں۔ کاشکر ہے۔

خط میں کہا گیا ہے کہ وفاقی اور پنجاب کی نگراں حکومتیں تحریک انصاف کی قیادت اور کارکنوں کو انتقام کا نشان بنانے کے لیے ہر حد سے گزر رہی ہیں، تحریک انصاف کے رہنماؤں کو انتخابات سے دور رکھنے کے لیے انہیں الجھایا جا رہا ہے۔ اور جھوٹے مقدمات کمیشن اپنی غیر جانبداری برقرار رکھنے میں بھی ناکام رہا ہے۔

فواد چوہدری نے زور دے کر کہا کہ اگر عدالتی افسران کے بجائے حکومت کے ماتحت افسران کو انتخابات کے انعقاد کی ذمہ داری سونپی گئی تو ان کی شفافیت کے امکانات ختم ہو جائیں گے اور عوام انہیں قبول نہیں کریں گے۔

پی ٹی آئی رہنما کا مزید کہنا تھا کہ فراڈ اور کرپشن کی روک تھام اور آزادانہ، منصفانہ اور شفاف انتخابات کے انعقاد کے لیے عدلیہ کا کردار بہت اہم ہے۔

فواد چوہدری نے استدعا کی کہ الیکشن کمیشن درخواست مسترد کرنے کے فیصلے پر نظرثانی کرے اور 30 ​​اپریل کو پنجاب میں ہونے والے انتخابات کے انعقاد کے لیے ماتحت عدلیہ کے افسران کی نامزدگیوں کے حوالے سے رجسٹرار کو مناسب ہدایات جاری کرے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here